تازہ ترین
Home / سپورٹس / 2016 کی کرکٹ 1990کا انداز؛ کپتان کے ماتھے پر پریشانی کی شکنیں نموردار

2016 کی کرکٹ 1990کا انداز؛ کپتان کے ماتھے پر پریشانی کی شکنیں نموردار

591155-AzharAliWeb-1472182674-178-640x480

ساو¿تھمپٹن: پاکستان کرکٹ ٹیم 2016 کی ون ڈے کرکٹ بھی 1990 کے انداز میں کھیل رہی ہے، شاید اسی لیے رینکنگ میں نویں درجے پر پہنچ گئی، کوچ مکیآرتھر نے بھی گذشتہ دنوں جدید طریقے سے نہ کھیلنے پر تشویش ظاہر کی تھی۔تفصیلات کے مطابق پاکستان نے انگلینڈ کیخلاف ٹیسٹ سیریز میں حیران کن کھیل پیش کیا اور کم بیک کرتے ہوئے مقابلہ2-2سے برابر کرکے تاریخ میں پہلی بار عالمی رینکنگ میں نمبرون کا تاج بھی سرپر سجا لیا، مگر فارمیٹ تبدیل ہوتے ہی مہمان ٹیم کا مزاج بھی یکسر مختلف نظر آیا،کھلاڑیوں کے جدید ون ڈے کرکٹ سے ہمآہنگ نہ ہونے پر کپتان اظہر علی بھی تشویش میں مبتلا نظرآتے ہیں،میچ کے بعد میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ سپورٹنگ پچ پر ہمارا ٹوٹل توقعات کے مطابق نہ تھا، یہاں 290رنز بنائے جا سکتے تھے لیکن بیٹسمینوں نے بہت زیادہ ڈاٹ بالز کھیلیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ انگلش بولرز نے اچھی بولنگ کی لیکن جدید ون ڈے کرکٹ میں رنز بنانے کے طریقے نکالنے پڑتے ہیں،ٹاپ آرڈر کو اچھا آغازدینا ہوتا ہے۔بعد ازاں مڈل آرڈر بیٹنگ رنز کی رفتار کو مزید آگے بڑھاتی ہے، ہمارا یہ ردھم ٹوٹ گیا، آخری اوورز میں بھی ہم مطلوبہ رن ریٹ برقرار نہیں رکھ پائے، میرے خیال میں گرین شرٹس نے 30رنز کم بنائے۔ انھوں نے کہا کہ انگلش اننگز کی ابتدا میں بولرز نے بھی اچھی کارکردگی نہیں دکھائی، کثرت سے شارٹ گیندوں کی وجہ سے فیلڈنگ سیٹ کرنے میں بھی مشکلات پیش آئیں، اس سے ہمیشہ جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرنے والی میزبان ٹاپآرڈر کو کھل کر رنز بنانے کا موقع ملا، اگر ہمارے بولرز شروع میں اٹیک کرنے میں کامیاب ہوجاتے تو شاید بہتر پلاننگ کا موقع مل جاتا۔اظہر علی نے تسلیم کیا کہ فیلڈنگ میں خامیوں کی وجہ سے حریف کو دباﺅ میں نہ لاسکے۔رنز روکنے اور کیچز لینے سے ہمیشہ بیٹنگ سائیڈ کیلیے پریشانی پیدا ہوتی ہے لیکن ہم نے جو فیلڈنگ کی اس سے کہیں زیادہ بہتر کارکردگی دکھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں، اگلے میچز میں ان مسائل پر قابو پاتے ہوئے کوشش کرینگے کہ ہر کھلاڑی پلان کے مطابق کھیلتے ہوئے ٹیم کیلیے اپنا کردار ادا کرے۔ ایک سوال پر کپتان نے کہا کہ عماد وسیم کو اننگز کی ابتدا میں بولنگ کا موقع دینا حکمت عملی کا نتیجہ تھا لیکن ہوا کا رخ دیکھتے ہوئے محمد عامر کوآزمانے کا فیصلہ کیا،غلطیوں کا بغور جائزہ لیتے ہوئے اگلے میچ میں بہتر کھیل پیش کرنے کی کوشش کرینگے۔ یاد رہے کہ بدھ کو کھیلے گئے پہلے ڈے نائٹ ون ڈے میں انگلینڈ نے پاکستان کوڈک ورتھ لوئس سسٹم کے تحت 44 رنز سے ہرایا تھا، گرین شرٹس نے261 رنز کا ہدف دیا، جواب میں میزبان ٹیم نے 3 وکٹ پر34.3 اوورز میں 193 رنزبنائے تھے کہ بارش کے باعث میچ روک دیا گیا۔انگلینڈ نے اپنی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو میچ کو 48 اوورز تک محدود کرکے ہدف 252 کردیا گیا، میچ جیتنے کیلیے 14 اوورزمیں59رنز درکار تھے کہ مسلسل بارش کے باعث کھیل ایک بار پھر روکنا پڑا جس کے بعد ڈی ایل میتھڈ کے تحت میزبان ٹیم کو 44 رنز سے فاتح قرار دیدیا گیا، روئے65 اور روٹ61رنز کی اننگز کھیلنے میں کامیاب ہوئے، عمر گل اور نواز نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔ دونوں ٹیمیں اب ہفتے کو لارڈز میں دوسرا ون ڈے انٹرنیشنل کھیلیں گی۔

About geopakistan

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>